سدا سہاگن – ملفوظاتِ محبوبِ ذات

حضور سرکارِ عالی قدس سرہٗ العزیز جب اپر باڑیاں سے ملازمت ترک کر کے رخصت ہوئے تو لوگوں نے کہا کہ حضور! ہمیں اپنا فیض بخش جائیں۔ آپ نے فرمایا کہ ہم نے اس درخت کو‘ جو جنگل میں ہماری عبادت گاہ کے قریب تھا، ہر مرض کے لیے شفایاب کر دیا ہے۔ اس کا ایک پتہ کھانے سے مریض شفایاب ہو جائے گا۔ حاضرین میں سے کسی نے کہا حضور! سردیوں میں اس کے پتے جھڑ جاتے ہیں۔ اس پر آپ نے اپنی نگاہِ لطفِ کرم سے اس درخت کو سدا سہاگن بنا دیا۔ اب کسی موسم میں بھی اس کے پتے نہیں جھڑتے۔

Advertisements
This entry was posted in ملفوظاتِ محبوبِ ذات, محبوبِ ذات and tagged , , , , , , , , , , , , , , . Bookmark the permalink.

اپنی رائے نیچے بنے ڈبے میں درج کر کے ہم تک پہنچائیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s