صبر و استقامت – ملفوظاتِ محبوبِ ذات

عجز و انکساری اور شدید مجاہدہ سے کام لو تاکہ تم واصل باللہ ہو جائو۔ نفس کو پامال کر کے خدا کا قرب حاصل کرو۔ مجاہدہ کے بغیر مشاہدہ ممکن نہیں۔ آقائے نامدار‘ رحمۃ للعالمین ﷺ جو فطرتاً معصوم مطلق تھے‘ ہمہ وقت قرب میں تھے‘ گناہوں سے محفوظ و مُبرّا تھے‘ عاقبیت کی تمام سعادتوں سے مشرف تھے‘ بایں ہمہ اتنا مجاہدہ کیا کہ بھوکے رہتے‘ راتوں کو بیداری اختیار کرتے‘ کثرت سے روزہ رکھتے‘ فاقہ کرتے‘ تعمیرِ مسجد میں مشقت فرماتے‘ حتیٰ کہ اللہ تعالیٰ نے ریاضت و مشقت میں کئی جگہ تخفیف کی تلقین فرمائی۔ حضرت محبوبِ ذات قدس سرہٗ العزیز نے مذکورہ بالا تمام عوامل کی پابندی اور پیروی کی اور اس طرح محبوبِ ذات ٹھہرے۔

Advertisements
This entry was posted in ملفوظاتِ محبوبِ ذات, محبوبِ ذات and tagged , , , , , , , , , , , , , , . Bookmark the permalink.

اپنی رائے نیچے بنے ڈبے میں درج کر کے ہم تک پہنچائیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s